دماغ کی صلاحتیں بڑھانے والی ڈیوائس

ایلون مسک ایسی ڈیوائس دماغوں میں امپلانٹ کرنے کا سوچ رہے ہیں جو کہ بلیوٹوتھ ٹیکنالوجی رکھتی ہونگی اور جس کے ذریعے مریض کا دماغ ٹیلی پیتھی اور مختلف دماغی امور جو وہ مختلف حادثات کی وجہ سے کھو چکا ہے کر سکے گا۔

نیورالنک نامی یہ ڈیوائس یو ایس بی سی پورٹ اور ایک چھوٹی سی چِپ پر مشتمل ہوگی جسے کان کے اوپر امپلانٹ کیا جائے گا اور یہ بلیو ٹوتھ کے ذریعے سے موبائل کیساتھ منسلک ہوگی۔

اس ڈویوائس کو ایک روبوٹ دماغ میں دو ملی میٹر کے سوراخ میں انسٹال کرے گا جہاں پہ چپ سوراخ میں چلی جائے گی۔ جبکہ اس روبوٹ کی نگرانی ماہر سرجن کیا کریں گے۔ مسک کے مطابق یہ طریقہ کار آنکھ کی سرجری کے پروسیجر لائزک جیسا ہی ہے، جس کے ٹرائلز 2020 کے اختتام سے پہلے شروع کر دئیے جائیں گے۔

مترجم ضیغم قدیر

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں