Spread the love

تحریر ضیغم قدیر

 

اس دور کا سب سے حسین امتزاج بائیوٹیکنالوجی اور کمپیوٹرٹیکنالوجی کا امتزاج ہے کیونکہ اس امتزج سے جہاں ہم بہت سی بیماریوں کا علاج ڈھونڈنے میں کامیاب ہورہے ہیں تو وہیں مستقبل میں اس ٹیکنالوجی کو استعمال کرکے انسانی عمر بڑھانے جیسے پیچیدہ مسلے سے لیکر انسانی پاور بڑھا کر ایک انسان کو سپر انسان بنانے جیسے پیچیدہ ترین کام بھی کرسکیں گے۔

مطلب کہ ہم بائیونک انسان بننے میں کامیاب ہوسکیں گے…؟

اس ضمن میں حالیہ کاوشیں جو ہورہی ہیں ان میں آدھے دماغ والے لوگ hemispherecotmy (مرگی کے شکار لوگوں کا آدھا خراب حصہ نکال دینے کی تکنیک ہے تفصیلا بات الگ پوسٹ میں ہو چکی ہے۔) سے لیکر کمپیوٹر سگنلز سے چلنے والے پلاسٹک کے انسانی اعضا تک بہت کچھ شامل ہے۔جبکہ حال ہی میں ایلن مسک نے ایسے ٹول یا پھر برین امپلانٹ کو لانچ کرنے کا بھی اعلان کیا ہے جسکے ذریعے ہم میموری ڈاونلوڈ یا اپلوڈ کرسکیں گے اور یہ ٹیکنالوجی بہت جلد میسر ہوگی۔ مطلب کہ ہماری یادداشتیں ہمیشہ رہ سکیں گی اور ڈبل مطلب یہ کہ ہم ہمیشہ رہ سکیں گے….! یہ بھی ممکن ہونے جارہا ہے۔ (یہ تجربہ اس ماہ ہونیوالا ہے)

اسکے علاوہ گوگل کی ذیلی کمپنی کالیکو کے سائنسدان ان آفیشلی دعوی کرچکے ہیں کہ وہ انسانی عمر کو 650 سالوں تک بھی بڑھا سکتے ہیں۔

اب ذرا دو سال مستقبل میں جاکر دیکھیں کہ اس حسین امتزاج کے نتیجے میں انسانی نسل ان حیران کن ایجادات کے ساتھ ساتھ کن کن مزید تبدیلیوں کی شاہد بنتی ہے…!
اس ٹاپک پہ تفصیلی بات پھر کبھی سہی تب تک کے لیۓ انجواۓ دس ٹیکنالوجی۔

جبکہ تصویرمیں نظر آنیوالا روبوٹ ایک بائیونک انسان ہے جو کہ کام کرتا دل اور پھیپھڑے رکھتا ہے اور اسکی قیمت ایک ملین ڈالر ہے۔l

اپنا تبصرہ بھیجیں